فواد عالم کی 3911 دن بعد پاکستانی ٹسٹ ٹیم میں واپسی

سید پرویز قیصر سنئیر اسپورٹس جرنلسٹ نئی دہلی

انگلینڈ کے خلاف ساوتھمپٹن میں جاری دوسرے ٹسٹ میں فواد عالم پاکستانی ٹیم میں جگہ حاصل کرنے میں کامیاب ہوئے۔انہیں 3911 دن بعد پاکستان کی ٹسٹ ٹیم میں کھیلنے کا موقع ملا ہے۔ اس وقفہ میں پاکستانی ٹیم نے 88 ٹسٹ میچ کھیلے تھے۔ فواد عالم کی واپسی اچھی نہیں رہی اور وہ پاکستان کی پہلی اننگ میں اپنا کھاتہ کھولے بغیر چوتھی بال کریس ووکس کے ہاتھوں ایل بی ڈبلیو ہوئے۔وہ ساتویں اننگ میں پہلی مرتبہ صفر کا شکار ہوئے۔
بائیں ہاتھ سے بلے بازی کرنے والے فواد عالم نے اپنا پہلا ٹسٹ سری لنکا کے خلاف کولمبو میں 2009 میں کھیلا تھا۔اسی سال نومبر میں نیوزی لینڈ کے خلاف ڈونیڈن میں وہ اپنا تیسرا ٹسٹ کھیلے تھے جس کے بعد وہ ٹسٹ ٹیم سے باہر ہوگئے تھے۔ اس دوران انہوں نے ایک روزہ بین الاقوامی میچ اور ٹونٹی ٹونٹی بین الاقوامی میچوں میں پاکستان کی نمائندگی ضرور کی تھی۔
فواد عالم کی 3911 دن یعنی دس سال اور259 دن بعد واپسی ٹسٹ کرکٹ میں پاکستان کی جانب سے دوسرا سب سے زیادہ اور کل ملاکر ساتواں سب سے زیادہ وقت ہے۔

فوٹو پی سی بی

انگلینڈ کے گراتھ بیٹی نے ٹسٹ ٹیم میں واپسی کے لئے سب سے زیادہ وقت لیا تھا۔ انہوں نے 11 سال اور 137 دن کے بعدٹسٹ ٹیم میں دوبارہ جگہ بنائی تھی۔ اس دوران انگلینڈ نے 142 ٹسٹ کھیلے تھے۔ انہوں نے ٹیم میں واپسی سے پہلے سات ٹسٹ کھیلے تھے جبکہ ٹیم میں واپسی کے بعد وہ دو ٹسٹ میچ اور کھیلے تھے۔
مارٹن بکنیل نے9 اگست1993 کو اپنا دوسرا ٹسٹ کھیلا تھا جس کے بعد انہیں تیسرے ٹسٹ کے لئے 10 سال اور12 دن کا انتطار کر نا پڑا تھا۔ اس دوران انگلینڈ نے114 ٹسٹ کھیلے تھے۔ مارٹن بکنیل نے واپسی کے بعد دو ٹسٹ میچوں میں شرکت کی تھی اورانہوں کل چار ٹسٹ میچوں میں شرکت کی تھی۔
ویسٹ انڈیز کے فلائیڈ رائفر نے چوتھے اور پانچویں ٹسٹ کے درمیان 109 ٹسٹ مس کئے۔ یہ ٹسٹ ویسٹ انڈیز نے دس سال اور172 دن کے عرصہ میں کھیلے۔ انہوں نے چار ٹسٹ کھیلنے کے بعد دو ٹسٹ میچوں کے لئے ٹیم میں واپسی کی تھی۔
پاکستان کے یونس احمد نے نیوزی لینڈ کے خلاف کراچی میں اکتوبر1969 میں اپنا پہلا ٹسٹ کھیلا تھا۔ جس کے بعد وہ لاہور میں اگلا ٹسٹ بھی کھیلے تھے۔ جنوبی افریقہ کو دورہ کرنے کی وجہ سے ان پر پابندی عائد کی گئی تھی۔ پاکستان نے جب1987 عمران خان کی قیادت میں ہندوستان کا دورہ کیا تھا تو انہیں جے پور میں ہوئے ٹسٹ میں پاکستانی ٹیم میں جگہ ملی تھی۔ اس دوران پاکستانی ٹیم نے 104 ٹسٹ کھیلے تھے۔ ان کو ٹیم میں واپسی کے لئے 17 سال اور111 دن کا انتظار کرنا پڑا تھا۔ انہوں نے سب سے زیادہ رن اپنے آخری ٹسٹ میں بنائے تھے۔ کولکاتہ میں ہوئے اس ٹسٹ میں وہ 74 رن بنانے میں کامیاب رہے تھے۔اس ٹسٹ کے آخری دن انکی عمر 39 سال اور139 دن تھی۔اس دورے میں انہوں نے دو ایک روزہ بین الاقوامی میچوں میں بھی شرکت کی تھی۔ فیصل فیچرس

2 تبصرے “فواد عالم کی 3911 دن بعد پاکستانی ٹسٹ ٹیم میں واپسی

اپنا تبصرہ بھیجیں