جیمس اینڈرسن ٹیسٹ کرکٹ میں 600 وکٹ لینے والے پہلے تیز بالر

سید پرویز قیصر سنئیر اسپورٹس جرنلسٹ نئی دہلی

جیمس اینڈرسن ٹسٹ کرکٹ میں چھ سو کٹ لینے والے پہلے تیز بالر اور کل ملاکرچوتھے بالر بنے۔

انہوں نے  پاکستان کے خلاف ساوتھمپٹن میں کھیلے گئے تیسرے اور آخری ٹسٹ کے آخری دن پاکستان کے کپتان اظہر علی کو ایل بی دبلیو کرکے یہ اعزاز اپنے156 ویں ٹسٹ کی291 ویں اننگ میں حاصل کیا۔

دائیں ہاتھ سے تیز بالنگ کرانے والے جیمس اینڈرسن 38سال اور26 دن کی عمر میں ایسا کرنے میں کامیاب ہوئے۔

وہ ایسا کرنے والے سب سے بڑی عمروالے بالر ہیں۔ اس سے پہلے سب سے بڑی عمر میں چھ سو وکٹ لینے والے بالر انیل کومبلے تھے۔

ہندوستانی لیگ اسپنر نے جب اپنا چھ سواں وکٹ لیا تھا تو انکی عمر37 سال اور92 دن تھی۔

آسڑیلیا کے لیگ اسپنر شین وارن نے جب اپنا چھ سواں وکٹ لیا تھا تو وہ 35 سال اور332 دن تھی۔ سب سے کم عمر میں چھ سو وکٹ لینے والے بالر متھیہ مرلی دھرن ہیں۔ سری لنکا کے اس آف اسپنر نے جب اپنا چھ سواں وکٹ لیا تھا تو وہ33 سال اور327 دن تھی۔

متھیہ مرلی دھرن کو ٹسٹ کرکٹ میں سب سے زیادہ وکٹ حاصل کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔سری لنکا کے اس آف اسپنر نے 1992 اور2010 کے درمیان جو 133 ٹسٹ میچ کھیلے انکی 230 اننگوں میں 44039 بالوں پر18180 رن دیکر22.72 کی اوسط اور55.04 کے اسٹرائیک ریٹ کے ساتھ800 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا۔

انہوں نے 67 مرتبہ ایک اننگ میں پانچ یا اس سے زیادہ اور22 مرتبہ ایک میچ میں دس یا اس سے زیادہ کھلاڑیوں کو آوٹ کیا ہے۔

انکی سب سے اچھی بالنگ کارکردگی 40 اوور میں 51 رن دیکر نو وکٹ ہے جو انہوں نے زمبابوے کے خلاف کینڈی میں جنوری2000 میں کھیلے گئے میچ میں انجام دی تھی۔

انگلینڈ کے خلاف اوول میں اگست 1998 میں وہ113.5 اوور میں 220 رن دیکر 16 کھلاڑیوں کوآوٹ کرنے میں کامیاب رہے تھے جو انکی ایک ٹسٹ میں سب سے اچھی بالنگ کارکردگی ہے۔

جیمس اینڈرسن ٹیسٹ کرکٹ میں 600 وکٹ لینے والے پہلے تیز بالر
فوٹو انگلینڈ کرکٹ

شین وارن کو ٹسٹ کرکٹ میں دوسرے سب سے زیادہ وکٹ حاصل کرنے کا اعزاز حاصل ہے۔آسڑیلیا کے اس لیگ اسپنر نے 1992 اور2007 کے درمیان جو 145 ٹسٹ میچ کھیلے انکی 273 اننگوں میں 40705 بالوں پر17995رن دیکر25.41 کی اوسط اور57.49 کے اسٹرائیک ریٹ کے ساتھ708 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا۔

انہوں نے 37 مرتبہ ایک اننگ میں پانچ یا اس سے زیادہ اودس مرتبہ ایک میچ میں دس یا اس سے زیادہ کھلاڑیوں کو آوٹ کیا ہے۔

انکی سب سے اچھی بالنگ کارکردگی 50.2 اوور میں 71 رن دیکرآٹھ وکٹ ہے جو انہوں نے انگلینڈ کے خلاف برسبین میں نومبر1994 میں کھیلے گئے میچ میں انجام دی تھی۔

یہ بھی پڑھیں ٹیسٹ سیریزانگلینڈ کے نام ویسٹ انڈیز کو شکست

جنوبی افریقہ کے خلاف سڈنی میں جنوری 1994 میں وہ69 اوور میں 128 رن دیکر 12کھلاڑیوں کوآوٹ کرنے میں کامیاب رہے تھے جو انکی ایک ٹسٹ میں سب سے اچھی بالنگ کارکردگی ہے۔

؁ٹسٹ کرکٹ میں تیسرے سب سے زیادہ وکٹ لینے والے بالر بھی اسپنر ہیں۔ ہندوستان کے لیگ اسپنر انیل کومبلے نے 1990 اور2008 کے درمیان جو 132 ٹسٹ میچ کھیلے انکی 236 اننگوں میں 40850 بالوں پر18355رن دیکر29.65 کی اوسط اور65.99 کے اسٹرائیک ریٹ کے ساتھ619 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا۔

انہوں نے 35 مرتبہ ایک اننگ میں پانچ یا اس سے زیادہ اور آٹھ مرتبہ ایک میچ میں دس یا اس سے زیادہ کھلاڑیوں کو آوٹ کیا ہے۔ پاکستان کے خلاف دہلی میں فروری 1999 میں کھیلے گئے میچ میں انہوں نے26.3اوور میں 74 رن دیکر دس کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا جو انکی سب سے اچھی بالنگ کارکردگی ہے۔

اسی میچ میں انہوں نے 51 اوور میں 149 رن دیکر14 کھلاڑیوں کو آوٹ کیا تھا جو انکی ایک میچ میں سب سے اچھی بالنگ کارکردگی ہے۔

جیمس اینڈرسن

اپنا تبصرہ بھیجیں