جنید خان نے امریکا کیلیے کرکٹ کھیلنے کی پیشکش مسترد کردی

پاکستان کے فاسٹ بولر جنید خان نے کہا ہے کہ امریکا سے کھیلنے کی پیشکش مسترد کردی ۔
ملک میں رہنا اوروطن کے لیے کھیلنا چاہتا ہوں ، امریکا سے ملنے والی پیشکش کو اسی لیے ٹھکرایا۔
بہترین کارکردگی کے باوجود ٹیم میںجگہ نہیں ملی، اچھے تعلقات ٹیم میں شامل ہونے کا معیار ہے۔

قومی فاسٹ بولر کی گفتگو،تفصیلات کے مطابق پاکستان کے فاسٹ بولرجنید خان نے کہا کہ مجھے اچھی کارکردگی کے باوجود ٹیم سے ڈراپ کردیا گیا۔
چمپئنز ٹرافی میں حسن علی کے بعد سب سے زیادہ وکٹیں میری تھیں۔
انہوں نے کہا کہ ڈر کی وجہ سے نوجوان بولر شاہین شاہ ہر میچ میں کھیلنے کی کوشش کرتے ہیں، ورک لوڈ کے معاملے میں ہمیں مغربی ٹیموں سے سیکھنا چاہیے۔
انگلینڈ کی ٹیم ورک لوڈ کے باعث ایک میچ میں جیمز اینڈرسن جبکہ دوسرے کھیل میں براڈ کو میدان میں اتارتی ہے، ان کے کھلاڑیوں کو ٹیم سے باہر ہونے کا ڈر نہیں ہوتا۔
جنید خان نے کہا کہ جن کھلاڑیوں کے چیف سلیکٹر یا کوچ سے اچھے تعلقات ہوتے ہیں، انہیں ناقص کارکردگی کے باوجود ٹیم میں شامل کرلیا جاتا ہے۔
انہوں نے کہا کہ چیمپئنز ٹرافی میں حسن علی کے بعد ٹورنامنٹ میں سب سے زیادہ وکٹیں میری تھیں مگر اس کے باوجود مجھے ٹیم سے ڈراپ کر دیا گیا۔
انہوں نے کہا کہ مجھے امریکا سے کھیلنے کی بڑی پیشکش ہوئی لیکن میں نے ملک میں رہنے کو ترجیح دی لیکن صلہ نہیں دیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں